اگر آپ کے پاس کریڈٹ کارڈ ہے تو آپ کو پہلے سے منظورشدہ قرض سےخریداری کا اختیارحاصل ہے۔کریڈٹ کارڈز بینک، ریٹیلرز یا دیگرادارے جاری کرتے ہیں۔کچھ ان پر سالانہ فیس لیتے ہیں تاکہ اکائونٹ سروس پر ہونے والے اخراجات پورے ہوسکیں، دوسرے یہ فیس نہیں لیتے۔ کریڈٹ کارڈ کے ذریعے خریداری کرنے کے بعد رقم کی ادائی ایک خاص مدّت میں ضروری ہوجاتی ہے جس پر کوئی مالیاتی چارج نہیں لگایا جاتا، لیکن مدّت گزرنے کے بعدواجب الادا رقم سود (بینک کا منافع) کے ساتھ یک مشت یا ماہانہ اقساط میں لوٹانا ہوتی ہے، اسے عام طور پرگردشی قرضہ"ریوالونگ کریڈٹ" کہاجاتا ہے۔
کارڈ کا اجراکرنے والے کچھ ادارے تاریخِ خریداری سے ہی کریڈٹ کارڈ کے استعمال پر سودچارج کرتے ہیں،چاہے کارڈ ہولڈر کے اکائونٹ میں پہلے سے کچھ واجب الادا بقایا جات ہوں یا نہیں۔
کریڈٹ کارڈپرشرح منافع، منافع کاحساب، سالانہ فیس اورباز ادائی (ری پیمنٹ)، مختلف کارڈز پر مختلف ہوسکتی ہے۔

کریڈٹ کارڈز: فوائدو نقصانات
کریڈٹ کےفائدے اور نقصانات دونوں ہیں۔اپنی ذمہ داریوں کا ادراک اورکریڈٹ کارڈ کو عققلمندی سے استعمال کرنے سے آپ اس کے نقصانات کم سے کم کرے کے زیادہ سے زیادہ فائدے حاصل کرسکتے ہیں۔

© جملہ حقوق -1996 بحق ویزا محفوظ۔